متفرق شعراء

ہے سراپا برکتوں کا ماہِ رمضاں مرحبا

لایا ہے پیغامِ بخشش ماہِ رمضاں مرحبا

نذر کرتی ہوں تجھے اپنے دل و جاں مرحبا

رحمتوں کی بارشوں کا موسمِ فرحت نواز

ہو مبارک خلق کو اِصلاح ایماں مرحبا

اس مہینے میں دیا رب نے ہمیں منشورِ دیں

نسخہ ہائے زندگی اترا ہے قرآں مرحبا

مانگ سکتا ہے تو ناداں مانگ لے باغِ ارم

ہے قریبِ ہر رگِ جاں شانِ یزداں مرحبا

روزہ داروں کو وہ دے گا اپنے دستِ خاص سے

بانٹ دے گا رحمتوں کو ساری رحماں مرحبا

ان شبِ عصیاں کی کالی اندھی راتوں کے لیے

رکھ دی ہے ایمان کی شمعِ فروزاں مرحبا

رب کا ہے احسان بشریٰؔ یہ مبارک ہر گھڑی

ہے سراپا برکتوں کا ماہِ رمضاں مرحبا

(بشریٰ سعید عاطف)

مزید دیکھیں

متعلقہ مضمون

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

For security, use of Google's reCAPTCHA service is required which is subject to the Google Privacy Policy and Terms of Use.

I agree to these terms.

Back to top button
Close