ارشادِ نبوی

ارشاد نبویﷺ

حضرت ابو سعید خدریؓ بیان کرتے ہیں کہ

جب آنحضرت صلی اللہ علیہ و سلم نیا کپڑا پہنتے تو اس کا نام لیتے۔ مثلاً عمامہ، قمیص،چادر۔ پھر آپؐ دعا کرتے کہ اے میرے اللہ! تو ہی تعریف کا مستحق ہے، تُو نے مجھے یہ کپڑا پہنایا، میں تجھ سے اِس کپڑے کے فائدے مانگتا ہوں اور اِس کی خیر چاہتا ہوں اور اُس کی بھی جس کے لیے یہ بنایا گیا اور مَیں تجھ سے پناہ مانگتا ہوں اِس کپڑے کے نقصان اور اُس مقصد کے شَر سے جس کے لیے یہ بنایا گیا ہے۔

(ترمذی کتاب اللباس باب ما یقول اذا لبس ثوبًا جدیدًا)

مزید دیکھیں

متعلقہ مضمون

رائے کا اظہار فرمائیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button
Close