متفرق شعراء

موجہِ ابرِ رواں ہیں ہم لوگ

روزنامہ’’الفضل‘‘ربوہ 20؍مئی 2013ء میں مکرم محمودالحسن صاحب کی ایک غزل شامل اشاعت ہے۔ اس غزل میں سے انتخاب پیش ہے:

موجہِ ابرِ رواں ہیں ہم لوگ

جانے کیوں سب پہ گراں ہیں ہم لوگ

ہوبہو مہر و وفا کی تصویر

ہمہ تن آہ و فُغاں ہیں ہم لوگ

نرم و نازک کبھی شبنم کی طرح

اور کبھی شعلہ بجاں ہیں ہم لوگ

یہ نہیں اہلِ خرد کو معلوم

واقفِ سرّ نہاں ہیں ہم لوگ

لاکھ بے یار و مددگار سہی

صاحبِ شانِ شہاں ہیں ہم لوگ

خرقۂ فقر ، ہماری زینت

رونقِ بزمِ جہاں ہیں ہم لوگ

آگ میں پڑ کے براہیم صفت

واردِ کوئے جناں ہیں ہم لوگ

متعلقہ مضمون

رائے کا اظہار فرمائیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

For security, use of Google's reCAPTCHA service is required which is subject to the Google Privacy Policy and Terms of Use.

I agree to these terms.

Back to top button
Close