نماز جنازہ حاضر و غائب

نمازِجنازہ حاضر و غائب

مکرم منیر احمد صاحب جاوید پرائیویٹ سیکرٹری حضرت خلیفۃ المسیح الخامس ایدہ اللہ تعالیٰ بنصرہ العزیز تحریر کرتے ہیں کہ حضور انور ایدہ اللہ تعالیٰ بنصرہ العزیز نے 23؍دسمبر 2021ء کو 12بجے دوپہر اسلام آباد (ٹلفورڈ) میں اپنے دفتر سے باہر تشریف لاکر مکرمہ مسرت بھٹی صاحبہ اہلیہ مکرم رشید احمد طاہر بھٹی صاحب مرحوم(آلڈر شاٹ یوکے) کی نماز جنازہ حاضر اور 13مرحومین کی نماز جنازہ غائب پڑھائی۔

نماز جنازہ حاضر

مکرمہ مسرت بھٹی صاحبہ اہلیہ مکرم رشید احمد طاہر بھٹی صاحب مرحوم(آلڈر شاٹ یوکے)

17؍دسمبر2021ء کو 76سال کی عُمر میں بقضائے الٰہی وفات پا گئیں۔

اِنَّالِلّٰہِ وَ اِنَّا اِلَیْہِ رَاجِعُوْنَ۔

مرحومہ مکرم غلام حیدر کھوکھر صاحب آف یوگنڈا کی بیٹی اور مکرم قاضی عبد السلام بھٹی صاحب کی بہُوتھیں۔یوگنڈا سے 1970ء میں یوکے آ ئیں۔حضرت خلیفۃ المسیح الرابع رحمہ اللہ کی یوکے آمد کے بعد حضور کی ڈاک ٹیم کے ساتھ منسلک ہو گئیں اور وفات تک انگلش ڈاک ٹیم کی انچارج کے طور پر خدمت بجالاتی رہیں۔ مرحومہ انتہائی نیک ،پرہیز گزار،صوم و صلوٰۃ کی پابند،تہجد گزار،دُعا گو، بہت ملنسار،غرباء کا خیال رکھنے والی اور خلافت کےساتھ اخلاص و وفا کا تعلق رکھنے والی ایک نیک دل بزرگ خاتون تھیں۔اپنے چندہ جات باقاعدگی سے بروقت ادا کیا کرتی تھیں۔زندگی میں بہت تکالیف دیکھیں لیکن خدا تعالیٰ پر توکل کرتے ہوئے تمام تکلیفوں کا سامنا کیا ۔ جماعتی کاموں کو ہمیشہ اوّلیت دی اور اپنی بیماری کو بھی کبھی ان کاموں میں حائل نہیں ہونے دیا۔ مرحومہ موصیہ تھیں۔ پسماندگان میں ایک ہمشیرہ اور لے پالک بیٹا عزیزم نبیل وحید بھٹی یاد گار چھوڑے ہیں۔

نماز جنازہ غائب

1۔مكرم راجہ محمد عبد اللہ خان صاحب ابن مکرم فیروز دین صاحب (ربوہ )

16؍نومبر 2021ء كو 90 سال كی عمر میں وفات پاگئے۔

اِنَّالِلّٰہِ وَ اِنَّا اِلَیْہِ رَاجِعُوْنَ۔

آپ نے 1953ء سے لے کر 2006ءتک خلافت لائبریری میں خدمت کی توفیق پائی اور محلہ میں بھی مختلف جماعتی اور تنظیمی عہدوں پر خدمت بجالاتے رہے۔ وفات سے قبل سیکرٹری وصایا کے طورپرخدمت بجالارہے تھے۔ آپ کے ذمہ جو کام بھی لگایا جاتا اسے بڑی فکر مندی سے سرانجام دیتے تھے۔ صوم وصلوٰۃ کے پابند ، تہجد گزار، غریب پرور، ہنس مکھ اور ایک بے ضرر اور مخلص انسان تھے۔ قرآن کریم سے عشق کی حدتک پیار تھااور باقاعدگی سے تلاوت کیا کرتے تھے ۔ مرحوم موصی تھے۔ پسماندگان میں چار بیٹے اور سات بیٹیاں اور متعدد پوتے پوتیاں اور نواسے نواسیاں شامل ہیں۔آپ کے بڑے بیٹے مکرم محمد ایوب خان صاحب انصار اللہ جرمنی کی نیشنل عاملہ میں بطور قائد تعلیم القرآن خدمت بجالارہے ہیں ۔آپ کے دونواسے مربی سلسلہ اور دو نواسے معلم سلسلہ ہیں ۔

2۔ مكرمہ نصرت خانم صاحبہ اہلیہ مکرم آغا محمد عبد اللہ خان صاحب مرحوم (امریکہ)

29؍اکتوبر2021ء كو بقضائے الٰہی وفات پاگئیں۔

اِنَّالِلّٰہِ وَ اِنَّا اِلَیْہِ رَاجِعُوْنَ۔

آ پ کا تعلق ایران کے مشہور بختیار قبیلہ کے ایک بااثر معز زخاندان سے تھا۔نواب شاہ میں 9سال تک بطور صدر لجنہ خدمت کی توفیق پائی ۔صوم وصلوٰۃ کی پابند، تہجدگزار، صابرہ شاکرہ ، خوش مزاج، مہمان نواز ، نیک اور ہمدرد خاتون تھیں۔ مرحو مہ موصیہ تھیں۔پسماندگان میں سات بیٹے اور تین بیٹیاں شامل ہیں۔آپ مکرم ہدایت احمد خان صاحب (واشنگٹن) کی والدہ تھیں۔

3۔مكرم محمود احمد طاہر صاحب ابن مکرم غلام رسول صاحب مرحوم (کوٹری ۔ضلع حیدرآباد۔سندھ)

27؍نومبر 2021ء كو 54سال كی عمر میں وفات پاگئے۔

اِنَّالِلّٰہِ وَ اِنَّا اِلَیْہِ رَاجِعُوْنَ۔

مرحوم بہت سادہ مزاج ، ہر کسی کے ساتھ ہمیشہ مسکر ا کر ملنے والے ایک اچھی طبیعت کے مالک مخلص انسان تھے۔مرحوم موصی تھے۔پسماندگان میں والدہ،بہن بھائی اور اہلیہ کے علاوہ ایک بیٹی اور ایک بیٹا عزیزم جاذب محمود( متعلم جامعہ احمدیہ ربوہ ) شامل ہیں ۔آپ مکرم لئیق احمد عاطف صاحب ( مبلغ سلسلہ مالٹا ) کے بہنوئی تھے ۔

4۔مكرمہ نصرت جہاں صاحبہ بنت مکرم سردار مجید الدین صاحب(ٹیچر نصرت جہاں گرلز کالج ربوہ)

13؍اکتوبر 2021ء کو بقضائے الٰہی وفات پاگئیں۔

اِنَّالِلّٰہِ وَ اِنَّا اِلَیْہِ رَاجِعُوْنَ۔

مرحومہ ایک نیک مخلص اور باوفا خاتون تھیں۔مرحومہ موصیہ تھیں۔آپ مکرم سردار نصیر الدین ہمایوں صاحب( کارکن حفاظت خاص یوکے ) کی ہمشیرہ تھیں۔

5۔مكرمہ نصرت جہاں بیگم صاحبہ اہلیہ مکرم میاں غلام احمد صاحب مرحوم (فیصل آباد)

3؍دسمبر 2021ء كو 85 سال كی عمر میں ربوہ میں وفات پاگئیں۔

اِنَّالِلّٰہِ وَ اِنَّا اِلَیْہِ رَاجِعُوْنَ۔

مرحومہ نمازوں کی پابند، چندوں میں باقاعدہ، ضرورت مندوں کا خیال رکھنے والی ایک مہمان نواز اور ہمدرد خاتون تھیں۔ مرحومہ موصیہ تھیں۔پسماندگان میں تین بیٹے اور چھ بیٹیاں شامل ہیں۔

6۔مكرم خواجہ برکات احمد صاحب ابن مکرم خواجہ عبدالرزاق احمد صاحب (ربوہ)

10؍ستمبر 2021ء کو 86 سال کی عمر میں بقضائےالٰہی وفات پاگئے۔

اِنَّالِلّٰہِ وَ اِنَّا اِلَیْہِ رَاجِعُوْنَ۔

مرحوم انتہائی مخلص ، خلافت کے شیدائی ، چندوں میں باقاعدہ اور جماعتی خدمت میں پیش پیش رہتے تھے ۔قرآن کریم کی تلاوت بڑی باقاعدگی سے روزانہ کیا کرتے تھے۔آپ نے محلہ میں امام الصلوٰۃ ، سیکرٹری اصلاح وارشاد اور سیکرٹری دعوت الی اللہ کے علاوہ متعدد عہدوں پر خدمت کی توفیق پائی ۔آپ بڑے فعال داعی الی اللہ تھے اور کئی بیعتیں بھی کروانے کی توفیق پائی ۔مرحوم اللہ کے فضل سے موصی تھے۔

7۔مكرم محمد صدیق بھٹہ صاحب ( طاہر آباد جنوبی ربوہ)

6؍ دسمبر 2021ء کو 86 سال کی عمر میں بقضائےالٰہی وفات پاگئے۔

اِنَّالِلّٰہِ وَ اِنَّا اِلَیْہِ رَاجِعُوْنَ۔

آپ نے دفتر پرائیویٹ سیکرٹری ربوہ میں خدمت کی توفیق پائی اور محلہ میں بھی مختلف عہدوں پر خدمت بجالاتے رہے۔ آپ کو اپنے گاؤں میں لڑکیوں کے لیے پرائمری سکول تعمیر کروانے کی بھی توفیق ملی ۔ آپ بہترین داعی الی اللہ تھے اور لمبا عرصہ تبلیغ کا فریضہ نہایت خوش اسلوبی سے سرانجام دیتے رہے ۔مرحوم موصی تھے ۔ پسماندگان میں اہلیہ کے علاوہ ایک بیٹا اور چھ بیٹیاں شامل ہیں ۔

8۔مكرمہ امۃ القدوس صاحبہ اہلیہ مکرم قاضی مقبول احمد صاحب (جرمنی)

31؍اکتوبر 2021ءکو بقضائےالٰہی وفات پاگئیں۔

اِنَّالِلّٰہِ وَ اِنَّا اِلَیْہِ رَاجِعُوْنَ۔

دین کے لیے غیر ت رکھنے والی، غریبوں کی ہمدرد،شفیق اور خلافت کے ساتھ اخلاص کا تعلق رکھنے والی ایک نیک خاتون تھیں۔ بچوں کی بہترین رنگ میں خدمت کی توفیق پائی ۔ مرحومہ موصیہ تھیں۔ پسماندگان میں چار بیٹے اور ایک بیٹی شامل ہیں۔

9۔مكرم حفیظ احمد چودھری صاحب ابن مکرم چودھری مرید علی صاحب ( ربوہ )

3؍دسمبر 2021ء کو77 سال کی عمر میں بقضائےالٰہی وفات پاگئے۔

اِنَّالِلّٰہِ وَ اِنَّا اِلَیْہِ رَاجِعُوْنَ۔

مرحوم نے 1967ء میں خود تحقیق کے بعد اہلیہ اور دو بچوں سمیت بیعت کی سعادت حاصل کی۔جس کے بعد آپ کو خاندان کی طرف سے شدید مخالفت کا سامنا کرنا پڑا مگر آپ اپنے عہد بیعت پر مضبوطی سے قائم رہے ۔ ربوہ شفٹ ہونے پر کچھ عرصہ بطور انسپکٹر انصار اللہ خدمت کی توفیق پائی اور پھر دارالضیافت میں خدمت بجالاتے رہے۔ محلہ میں زعیم انصار اللہ اور سیکرٹری امو رعامہ کے طورپر بھی خدمت کی توفیق پائی ۔ مرحوم موصی تھے ۔ پسماندگان میں اہلیہ کے علاوہ پانچ بیٹے اور پانچ بیٹیاں شامل ہیں۔ آپ کے ایک بیٹے مکرم اطہر حفیظ فراز صاحب (مربی سلسلہ) آج کل جوہر آباد خوشاب میں خدمت کی توفیق پارہے ہیں۔

10۔مکرمہ ڈاکٹر خورشید رزاق صاحبہ اہلیہ مکرم محمد عبدالرزاق صاحب ( امریکہ)

19؍جنوری 2021ءکو بقضائے الٰہی وفات پاگئیں۔

اِنَّالِلّٰہِ وَ اِنَّا اِلَیْہِ رَاجِعُوْنَ۔

مرحومہ پیشہ کے لحاظ سے ڈاکٹر تھیں اور اپنی میڈیکل فیلڈ میں ماہر جانی جاتی تھیں۔ مرحومہ بہت نیک، ہمدرد اور باوقار خاتون تھیں۔ صدر لجنہ Connecticut کے علاوہ نارتھ ایسٹ ریجن کی ریجنل صدر کے طورپر خدمت کی توفیق پائی۔ وقت کی بہت پابند اور نمازوں کی ادائیگی میں بڑی باقاعدہ تھیں۔ ساری زندگی بہت Discipline کے ساتھ گزاری۔ مرحومہ موصیہ تھیں۔ پسماندگان میں چار بیٹیاں اور ایک بیٹا شامل ہیں ۔

11۔مكرم بشیر افضل خان چودھری صاحب (بنگلہ دیش)

9؍دسمبر 2021ء كو بقضائے الٰہی وفات پاگئے۔

اِنَّالِلّٰہِ وَ اِنَّا اِلَیْہِ رَاجِعُوْنَ۔

مرحوم نے جماعت بنگلہ دیش میں نیشنل سیکرٹری صنعت و تجارت کے طورپر خدمت کی توفیق پائی۔ مرحوم بہت نافع الناس اور خلافت سے عقیدت کا گہرا تعلق رکھنے والے ایک نیک اور مخلص انسان تھے۔ آپ مکرم عبدالاول عمران صاحب ( امیر و مشنری انچارج بنگلہ دیش )کے ماموں زاد اور چچا زاد بھائی تھے۔

12۔مكرم رانا منظور حسین صاحب ابن مکرم حاجی فقیر محمد صاحب(یوکے)

2؍جولائی 2021ء كو 89 سال كی عمر میں بقضائے الٰہی وفات پاگئے۔

اِنَّالِلّٰہِ وَ اِنَّا اِلَیْہِ رَاجِعُوْنَ۔

مرحوم1994ءسے انگلینڈ میں مقیم تھے ۔ اس دوران آپ نے لوکل مجلس میں بطور زعیم انصار اللہ خدمت کی توفیق پائی ۔مرحوم ایک نیک مخلص اور باوفا انسان تھے۔

13۔مكرمہ بشریٰ ملاحت صاحبہ( قادیان )

نومبر2021ء میں 23 سال کی عمر میں بقضائےالٰہی وفات پاگئیں۔

اِنَّالِلّٰہِ وَ اِنَّا اِلَیْہِ رَاجِعُوْنَ۔

مرحومہ نظام جماعت کی اطاعت گزار اوردینی اور اخلاقی لحاظ سے بہت اچھی تھیں۔چندوں کی ادائیگی میں باقاعدہ تھیں۔

اللہ تعالیٰ تمام مرحومین سے مغفرت کا سلوک فرمائے اور انہیں اپنے پیاروں کے قرب میں جگہ دے۔ اللہ تعالیٰ ان کے لواحقین کو صبر جمیل عطا فرمائے اور ان کی خوبیوں کو زندہ رکھنے کی توفیق دے۔آمین

٭…٭…٭

مکرم منیر احمد صاحب جاوید پرائیویٹ سیکرٹری حضرت خلیفۃ المسیح الخامس ایدہ اللہ تعالیٰ بنصرہ العزیز تحریر کرتے ہیں کہ حضور انور ایدہ اللہ تعالیٰ بنصرہ العزیز نے 25؍دسمبر 2021ء کو 12بجے دوپہر اسلام آباد (ٹلفورڈ) میں اپنے دفتر سے باہر تشریف لاکر مکرم اقبال احمدصا حب ابن مکرم قدرت اللہ صاحب ( اِنر پارک لندن ) کی نماز جنازہ حاضر اور 03مرحومین کی نماز جنازہ غائب پڑھائی۔

نماز جنازہ حاضر

مکرم اقبال احمدصا حب ابن مکرم قدرت اللہ صاحب (انر پارک لندن )

22؍دسمبر 2021ءکو 82 سال کی عُمر میں بقضائے الٰہی وفات پا گئے ۔

اِنَّالِلّٰہِ وَ اِنَّا اِلَیْہِ رَاجِعُوْنَ۔

آپ کا تعلق سمندری (ضلع فیصل آباد)سے تھا اور پیشے کے لحاظ سے سکول ٹیچر تھے ۔ سمندری میں مقامی سطح پر خدام الاحمدیہ اور انصار اللہ میں خدمت کی توفیق پائی۔ 1978ء میں آپ کی ٹرانسفر تعلیم الاسلام ہائی سکول ربوہ میں ہوئی اور وہیں سے ریٹائر ہوئے۔ اس دوران دارالنصر غربی میں بطور سیکرٹری مال خدمت بجالاتے رہے۔ مرحوم انتہائی نیک ، دیندار، صوم وصلوٰۃ کے پابند،سب کے ساتھ انتہائی پیار و محبت سے پیش آنے والے، کم گواور خلافت کے ساتھ اخلاص و وفا کا تعلق رکھنے والے ایک بزرگ انسان تھے۔ پسماندگان میں 3 بیٹے اور 3 بیٹیاں شامل ہیں۔ ان کے ایک بیٹے مکرم منصور احمد قمر صاحب مجلس انصار اللہ یوکے میں بطور ایڈیشنل قائد مال خدمت کی توفیق پا رہے ہیں ۔

نماز جنازہ غائب

1۔ مكرم حشام احمد باجوہ صاحب ابن مکرم طاہر محمود باجوہ صاحب (لندن)

7؍نومبر2021کو51سال کی عمر میں بقضائے الٰہی وفات پاگئے۔

اِنَّالِلّٰہِ وَ اِنَّا اِلَیْہِ رَاجِعُوْنَ۔

مرحوم کے نانا حضرت عبد الحمید صاحبؓ اور نانی حضرت رسول بی بی صاحبہؓ دونوں حضرت مسیح موعود علیہ السلام کے صحابہ میں سے تھے۔ نمازوں میں باقاعدہ ، بہت ملنسار، بڑے مہمان نوازایک مخلص اور باوفا انسان تھے۔پسماندگان میں اہلیہ کے علاوہ دو بیٹیاں اور ایک بیٹا شامل ہیں۔ آپ مکرم چودھری عبد الرحمٰن صاحب ایڈووکیٹ مرحوم ( صدر قضاء بورڈ مرکزیہ ربوہ) کے بھانجے تھے۔

2۔مكرمہ بشریٰ رحمٰن صاحبہ اہلیہ مکرم عبدا لرحمٰن صاحب (ساؤتھ فیلڈز یوکے)

13؍نومبر 2021ء کو83 سال کی عمر میں کینیڈا میں وفات پاگئیں۔

اِنَّالِلّٰہِ وَ اِنَّا اِلَیْہِ رَاجِعُوْنَ۔

مرحومہ حضرت حاجی محمد موسیٰ صاحبؓ (کوٹلی لوہاراں سیالکوٹ )صحابی حضرت مسیح موعود علیہ السلام کی نواسی اور حضرت مولوی محمد حسین صاحبؓ (سبز پگڑی والے) کی سمدھن تھیں۔صوم وصلوٰۃ کی پابند، چندہ جات میں باقاعدہ ، خلافت سے محبت کرنے والی ایک نیک، مخلص ا ور فدائی خاتون تھیں۔پسماندگان میں چار بیٹے اور ایک بیٹی شامل ہیں۔

3۔مكرمہ امۃ الرؤوف صاحبہ (خانیوال ۔حال یوکے)

31؍اکتوبر 2021ءکو بقضائے الٰہی وفات پاگئیں۔

اِنَّا لِلّٰہِ وَ اِنَّا اِلَیْہِ رَاجِعُوْنَ۔

مرحومہ ایک نیک مخلص اور باوفا خاتون تھیں اور اللہ کے فضل سے موصیہ تھیں۔

اللہ تعالیٰ تمام مرحومین سے مغفرت کا سلوک فرمائے اور انہیں اپنے پیاروں کے قرب میں جگہ دے۔ اللہ تعالیٰ ان کے لواحقین کو صبر جمیل عطا فرمائے اور ان کی خوبیوں کو زندہ رکھنے کی توفیق دے۔آمین

٭…٭…٭

متعلقہ مضمون

رائے کا اظہار فرمائیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button
Close