متفرق شعراء

نعتِ رسولِ مقبولﷺ

(ثاقب زیروی)

جمالِ مہر و وفا کے قصے کمال صدق و صفا کی باتیں

جو ہوسکے تو سنائے جاؤں تمہیں حبیبِؐ خدا کی باتیں

وہی ہیں اول، وہی ہیں آخر، وہی ہیں ظاہر، وہی ہیں باطن

رہیں گی تا حشر اب زبانوں پہ خاتم الانبیاءؐ کی باتیں

میں داعی دینِ مصطفٰےؐ ہوں فدائی دینِ مجتبیٰؐ ہوں

ڈرا سکیں گی نہ میرے دل کو کبھی سزا و جزا کی باتیں

قدم قدم ان کی رہنمائی جہاں جہاں ان کی روشنائی

فضا میں پھیلی ہوئی ہیں اب تک سکوتِ غارِ حرا کی باتیں

مری لگن ان کا آستاں ہے یہی تڑپ تو متاعِ جاں ہے

کبھی تو ہوں گی شفیعِ محشرؐ سے ثاقبِ بےنوا کی باتیں

متعلقہ مضمون

رائے کا اظہار فرمائیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

For security, use of Google's reCAPTCHA service is required which is subject to the Google Privacy Policy and Terms of Use.

I agree to these terms.

Back to top button
Close