کلام حضرت مسیح موعود ؑ

بدظنی سے بچو

اگر دل میں تمہارے شر نہیں ہے

تو پھر کیوں ظنِ بد سے ڈر نہیں ہے

کوئی جو ظنِ بد رکھتا ہے عادت

بدی سے خود وہ رکھتا ہے اِرادت

گمانِ بد شیاطیں کا ہے پیشہ

نہ اہلِ عفت و دیں کا ہے پیشہ

تمہارے دل میں شیطاں دے ہے بچے

اسی سے ہیں تمہارے کام کچے

وہی کرتا ہے ظنِّ بد بِلا رَیب

کہ جو رکھتا ہے پردہ میں وہی عیب

وہ فاسِق ہے کہ جس نے رہ گنوایا

نظر بازی کو اِک پیشہ بنایا

مگر عاشق کو ہرگز بد نہ کہیو!

وہاں بدظنیوں سے بچ کے رہیو

اگر عشاق کا ہو پاک دامن

یقیں سمجھو کہ ہے تریاق دامَن

(درثمین)

متعلقہ مضمون

رائے کا اظہار فرمائیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

For security, use of Google's reCAPTCHA service is required which is subject to the Google Privacy Policy and Terms of Use.

I agree to these terms.

Back to top button
Close