متفرق شعراء

تجھ پہ رحمت مدام ہو پیارے

(مبارک احمد ظفر)

کام صالح تھا نام طالع تھا

وہ خلافت کا عین تابع تھا

اِک توانا صبیح خادم تھا

گوہرِ پاک ابنِ ہاشم تھا

پی گیا جام وہ شہادت کا

راستہ چن لیا حلاوت کا

اپنے پیاروں سے جا ملا ہے وہ

اب شہیدوں میں جا بسا ہے وہ

اس کی یادوں کو یوں سجائیں گے

اپنے سجدوں میں ہم بسائیں گے

تجھ پہ رحمت مدام ہو پیارے

تجھ کو میرا سلام ہو پیارے

متعلقہ مضمون

رائے کا اظہار فرمائیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button
Close