متفرق شعراء

وہ فہیم و ذکی و دل کا حلیم

شکر صد شکر دلستاں آیا

لِلّٰہ الْحمد مہرباں آیا

ہر طرف ہے فضا مسرّت کی

آج خوشیوں کا پھر سماں آیا

’مظہر الحق والعلا‘ بے شک

ابن مہدی بعزّ و شاں آیا

کی ہے فتح و ظفر نے پا بوسی

وہ مظفر و کامراں آیا

لے کے مژدہ بہار کا ہر سُو

باغِ احمدؑ کا باغباں آیا

وہ فہیم و ذکی و دل کا حلیم

وہ اولوالعزم خوش بیاں آیا

حُسن و احسان میں نظیر پدر

’فضل‘ و ’رحمت‘ کا ’اِک نشاں‘ آیا

اس کے سر پر خدا کا سایہ ہے

وہ جواں بخت شادماں آیا

معرفت کے بہا دیے دریا

علم کا بحرِ بےکراں آیا

(محمد ابراہیم شاد )

متعلقہ مضمون

رائے کا اظہار فرمائیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button
Close